اشاعتیں

Sindh Education And Literacy Mobile App لیبل والی پوسٹس دکھائی جا رہی ہیں

سندھ حکومت کی طرف سے سندھ ایجوکیشن اینڈ لٹریسی موبائل ایپ کا اجراء

تصویر
سندھ کے ﻭﺯﯾﺮ ﺗﻌﻠﯿﻢ ﻭ ﻣﺤﻨﺖ ﺳﻌﯿﺪ ﻏﻨﯽ ﻧﮯ ﮐﮩﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﮨﻢ ﺻﻮﺑﮧ ﺳﻨﺪﮪ ﻣﯿﮟ فی الوقت ﺗﻌﻠﯿﻤﯽ ﺍﺩﺍﺭﮮ ﮐﮭﻮﻟﻨﮯ ﮐﯽ ﭘﻮﺯﯾﺸﻦ ﻣﯿﮟ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﯿﮟ، ﺍﻭﺭ ﺍﮔﺮ ﮐﮭﻮﻝ ﺑﮭﯽ ﺩﯾﺘﮯ ﮨﯿﮟ ﺗﻮ ﺻﻮﺭﺗﺤﺎﻝ ﮐﮯ ﭘﯿﺶ ﻧﻈﺮ ﻭﺍﻟﺪﯾﻦ ﮐﯽ ﺍﭘﻨﮯ ﺑﭽﻮﮞ ﮐﻮ ﺷﺎﯾﺪ ﺍﺳﮑﻮﻝ ﻧﮧ ﺑﮭﯿﺠﯿﮟ۔ ﺍﺳﮑﻮﻝ ﮐﺎ ﮐﻮﺋﯽ ﻣﺘﺒﺎﺩﻝ ﻧﮩﯿﮟ ﮨﮯ ﺍﻭﺭ ﺍﺱ ﮐﺎ ﮨﻤﯿﮟ ﺑﮭﺮﭘﻮﺭ ﺍﺣﺴﺎﺱ ﮨﮯ۔ انہوں نے کہا کہ ﻣﺤﮑﻤﮧ ﺗﻌﻠﯿﻢ ﺳﻨﺪﮪ ﻧﮯ ﻣﺨﺘﻠﻒ ﺍﯾﻦ ﺟﯽ ﺍﻭﺯ ﮐﮯ ﺍﺷﺘﺮﺍﮎ ﺳﮯ ﮐﮯ ﺟﯽ ﺗﺎ ﭘﺎﻧﭽﻮﯾﮟ ﺟﻤﺎﻋﺖ ﺗﮏ ﮐﮯ ﻃﻠﺒﮧ ﻭﻃﺎﻟﺒﺎﺕ ﮐﮯ ﻟﺌﮯ ﺍﯾﻨﮉﺭﻭﯾﮉ ﻣﻮﺑﺎﺋﻞ ﺍﭘﻠﯿﮑﯿﺸﻦ ﮐﺎ ﺍﺟﺮﺍﺀ کیا ہے۔۔ ﺍﻥ ﺧﯿﺎﻻﺕ ﮐﺎ ﺍﻇﮩﺎﺭ ﺍﻧﮩﻮﮞ ﻧﮯ ﻣﻨﮕﻞ ﮐﮯ ﺭﻭﺯ ﺳﻨﺪﮪ ﺍﺳﻤﺒﻠﯽ ﮐﮯ ﺁﮈﯾﭩﻮﺭﯾﻢ ﻣﯿﮟ ﺳﻨﺪﮪ ﺍﯾﺠﻮﮐﯿﺸﻦ ﺍﯾﻨﮉ ﻟﭩﺮﯾﺴﯽ ﻧﺎﻣﯽ ﻣﻮﺑﺎﺋﻞ ﺍﯾﭗ ﮐﯽ ﺍﻓﺘﺘﺎﺣﯽ ﺗﻘﺮﯾﺐ ﮐﮯ ﻣﻮﻗﻊ ﭘﺮ ﭘﺮﯾﺲ ﮐﺎﻧﻔﺮﻧﺲ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ ﮐﯿﺎ۔ ﺍﺱ ﻣﻮﻗﻊ ﭘﺮ ﺳﯿﮑﺮﭨﺮﯼ ﺗﻌﻠﯿﻢ ﺳﻨﺪﮪ ﺳﯿﺪ ﺧﺎﻟﺪ ﺣﯿﺪﺭ ﺷﺎﮦ، ﺳﯿﮑﺮﭨﺮﯼ ﮐﺎﻟﺠﺰ ﺳﻨﺪﮪ ﺑﺎﻗﺮ ﻧﻘﻮﯼ، ﺍﯾﺲ ﺍﯼ ﺍﯾﻒ ﮐﮯ ﺍﯾﻢ ﮈﯼ ﮐﺒﯿﺮ ﻗﺎﺿﯽ، ﯾﻮﻧﯿﺴﻒ ﮐﮯ ﺁﺻﻒ ﺍﺑﺮﺍﺭ، ﻣﺎﺋﯿﮑﺮﻭ ﺳﻮﻓﭧ ﮐﮯ ﺟﺒﺮﺍﻥ ﺟﻤﺸﯿﺪ، ﺳﺒﻖ ﮐﮯ ﺣﺴﻦ ﺭﺿﻮﺍﻥ، ﺳﯽ ﭘﯽ ﺍﯾﻢ ﮐﮯ ﺣﻨﯿﻒ ﭼﻨﺎ، ﻣﻌﺮﻭﻑ ﺗﻌﻠﯿﻢ ﺩﺍﻥ ﮈﺍﮐﭩﺮ ﻓﻮﺯﯾﮧ ﺧﺎﻥ ﺍﻭﺭ ﺩﯾﮕﺮ ﺑﮭﯽ ﺷﺮﯾﮏ ﺗﮭﮯ۔ ﺍﯾﭗ ﮐﯽ ﺍﻓﺘﺘﺎﺣﯽ ﺗﻘﺮﯾﺐ ﮐﮯ ﻣﻮﻗﻊ ﭘﺮ ﺍﺳﮑﺮﯾﻦ ﭘﺮ ﺍﯾﭗ ﮐﮯ ﺣﻮﺍﻟﮯ ﺳﮯ ﻣﮑﻤﻞ ﺗﻔﺼﯿﻼﺕ ﺳﮯ ﻣﯿﮉﯾﺎ ﮐﻮ ﺁﮔﺎﮦ ﮐﯿﺎ ﮔﯿﺎ ﺍﻭﺭ ﺑﺘﺎﯾﺎ