ملیر میں کاٹھوڑ اور گڈاپ پر ایک نئی آفت

Locusts attack in sindh



کاٹھوڑ اور گڈاپ پر ایک نئی آفت؟


کراچی کے مضافات میں واقع ضلع ملیر کے علاقے کاٹھوڑ اور گڈاپ  ایک بار ٹڈی دل کی زد میں آگئے ہیں. 

لاکھوں کی تعداد میں ٹڈی دل  کئی باغات میں کھڑی فصلوں کو نقصان پہنچاتے ہوئے دیگر زرعی باغات کی طرف بڑھ رہے ہیں اور فصلوں کا صفایا کر رہے ہیں، جس سے کاشت کار سخت پریشان ہیں.

ٹڈل دل ہر طرف  فصلیں برباد کر رہے  ہیں، درختوں اور پودوں کے پتوں سمیت سبزہ ہڑپ کر رہے ہیں. یہ جہاں بھی حملہ آور ہو رہے ہیں، وہاں آسماں میں بادلوں کی طرح چھا رہے ہیں

یہ رواں سال ان علاقوں میں ٹڈی دل کا دوسرا حملہ ہے،  کچھ ماہ قبل جب ٹڈی دل کا حملہ ہوا تھا محکمہ زراعت سندھ کی طرف سے کوئی بھی اقدام نہیں اٹھایا گیا تھا اور متاثرہ علاقوں میں فضائی اسپرے نہ ہونے کی وجہ سے ٹڈی دل کا مکمل خاتمہ بھی ممکن نہیں ہو سکا تھا۔
اس وقت بھی کاشتکاروں کی طرف سے حکومت سے مدد کرنے کی اپیل پر وزیر زراعت سندھ اسماعیل راہو نے کہا تھا کہ سندھ حکومت اس سلسلے کچھ بھی کرنے سے قاصر ہے، لوگوں کو چاہیے کہ ٹڈی دل کو پکڑیں اور کھا لیں. کیا اب کی بار بھی ایسا ہی ہوگا. 

کرونا کی وجہ سے لاک ڈاؤن پہلے ہی لوگوں کو معاشی طور پر دیوالیہ کر چکا ہے، اب یہ نئی آفت ٹوٹ پڑنے پر لوگ سخت پریشانی کا شکار دکھائی دے رہے ہیں.

تبصرے

اس بلاگ سے مقبول پوسٹس

"کرانچی ہمارا" اور "مرسوں مرسوں" کے شور میں دبی یہ آواز.... ذرا سی توجہ چاہتی ہے.

Gates Foundation, Wuhan Lab and WHO hacked. کروناوائرس: اصل حقیقت آخر ہے کیا

بجٹ اور ﺳﺮﮐﺎﺭﯼ ﻣﻼﺯﻣﯿﻦ  کی ﺗﻨﺨﻮﺍﮦ ﻣﯿﮟ ﺍﺿﺎﻓﮧ